پٹھان سعودی عرب میں

سعودی عرب کے ایک بازار میں خان صاحب نسوار کھانے لگے تو ایک سعودی نے انہیں سمجھایا
یا اخی۔ ھذا النسوار لیس جید للصحت
(اے بھائی نسوار صحت کے لیے اچھی نہیں)
خان صاحب پر سعودی باشندے کی بات کا اتنا اثر ہوا کہ آنکھوں سے آنسو رواں ہوگئے۔ خان صاحب بیساختہ سعودی کے گلے لگ گئے اور اسکے ہاتھ چومنا شروع کردیا۔ سعودی نے وجہ پوچھی تو خان صاحب بولے
اوہ ماڑا۔ ہم کو آج معلوم ہوا کہ نسوار کا ذکر قرآن شریف میں بھی ہے”