بھارت کے سب سے بڑے دولت مند مکیش امبانی کے بیٹے کی ہندوؤں میں مقبولیت کی حیران کن وجہ سامنے آگئی
Banner

لاہور( ڈیلی خبر)بھارت کے سب سے بڑے دولتمند مکیش امبانی کے بیٹے اننت امبانی کثیر دولت کے مالک ہونے کے ساتھ ساتھ وہم اور مذہب پرستی کا بھی شکار ہیں،انہیں جب بھی کوئی مشکل آتی ہیں تو وہ مختلف مندروں میں جاکر منت چڑھاتے ہیں ۔اننت امبانی کی اس عادت کی وجہ سے بھارت کے مذہب پرستوں میں انکو مقبولت حاصل ہورہی ہے۔ اننت امبانی نے غیر معمولی طور پر بہت زیادہ موٹے ہونے کی وجہ سے پنڈتوں کے کہنے پر مندر یاترا شروع کی تھی اور آج جبکہ وہ ستر کلو وزن کم کرچکے ہیں تو اسکو وہ بھگوان کے نام سویکار کررہے ہیں ۔اننت امبانی کے دل میں تین سال پہلے پوجا پاٹ کی خواہش بیدار ہوئی تو انہوں نے بالا جی کے مندر پر سفید ہاتھی کی بڑی مورتی دان کی ۔وہ بالاجی کے مندر باقاعدگی سے جاتے ہیں ۔بھارتی میڈیا کے مطابق اننت امبانی آنے والے وقت میں بھارت کی سیاست میں نمایاں کردار ادا کریں گے اور انہوں نے ہندو بنیاد پرستوں کا دل جیتنے کے لئے مندریاترا شروع کررکھی ہے۔اب تک وہ سومنات ،دوارکادش،سدھوی نائک،ترو مالا،سمیت کئی بڑے مندروں میں پوجا پاٹ کرچکے ہیں ۔ اننت امبانی نے اپنے غیر ملکی مہمانوں کو بھی مندروں لے جانا شروع کردیا ہے۔ایپل کے چیف اوپریٹنگ افیسر کے دورے پر وہ انہیں سدھوی نائک مندر میں لے گئے ان سے بھی پاٹ کرائے ۔واضح رہے کہ اننت امبانی امیتابھ بچن کی طرح ترومالا کے سب سے پرانے مندر بالا جی کے درشن کرنے جاتے ہیں ۔بالا جی کے مندر میں ہر سال اربوں روپے بھینٹ کئے جاتے ہیں ۔گزشتہ سال دوکروڑ سے زائد یاتریوں نے 1,018 کروڑ روپے بالا جی کی نذر کئے تھے۔