بڑا اسلامی ملک فحش ویب سائٹس بند کرتے ہوئے ایسا کام کر بیٹھا کہ پوری دنیا میں شور مچ گیا

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) فحش فلموں کی ویب سائٹس پر ایران میں پابندی عائد ہے اورایران کی انٹرنیٹ فراہم کرنے والی سب سے بڑی کمپنی ”ٹیلی کمیونی کیشن کمپنی آف ایران(ٹی آئی سی)“ انتہائی سختی کے ساتھ یقینی بناتی ہے کہ پورے ملک میں کوئی بھی فحش ویب سائٹ نہ چلنے پائے۔ عموماً ٹی آئی سی کے اقدامات اپنے ملک کی حدود کے اندر رہتے ہیں لیکن thenextweb.comکی رپورٹ کے مطابق گزشتہ دنوں اس کمپنی نے ایک ایسا کام کر دیا کہ دیگر کئی ممالک میں بھی 256سے زائد فحش ویب سائٹس بند ہو گئیں۔ ان ممالک میں ہانگ کانگ، روس، انڈیا اور انڈونیشیاءشامل ہیں۔رپورٹ کے مطابق ٹی سی آئی نے اعلان کیا تھا کہ وہ ان ویب سائٹس کے دھوکہ دے کر آئی پی ایڈریسز تک پہنچنے والے تمام روٹس بند کر دے گی۔ لیکن جلد بازی میں اس نے مذکورہ ممالک کی طرف جانے والے روٹس بھی بند کر دیئے جس سے ان ممالک میں بھی یہ ویب سائٹس بند ہو گئیں۔28گھنٹے بند رہنے کے بعد ان ممالک کے ویب روٹس آہستہ آہستہ کھلنا شروع ہو گئے۔رپورٹ کے مطابق ٹی سی آئی نے بی جی پی ہائی جیکنگ کے طریقہ کار کے ذریعے یہ ویب روٹس بلاک کیے تھے۔ یہ طریقہ ویب سائٹس پر پابندی لگانے کے لیے خاصا مقبول ہے لیکن بسااوقات اس سے دوسرے ممالک بھی متاثر ہوتے ہیں۔ جس طرح 2008ءمیں پاکستانی حکومت نے ملک میں یوٹیوب بند کرنے کے لیے یہی تکنیک استعمال کی لیکن نادانستہ طور پر پوری دنیا میں ہی یوٹیوب بند کر بیٹھی تھی۔