’ایک گھنٹے میں اتنے درجن چالان کہ گنتی بھی مشکل‘ وہ خاتون جس نے عالمی ریکارڈ قائم کردیا خواتین کی ڈرائیونگ کے بارے میں ہمارے تمام خدشات درست ثابت کردئیے

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک)دبئی میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی سنگین جرم تصور کیا جاتا ہے اور لوگ ہر ممکن کوشش کرتے ہیں کہ اس جرم سے بچیں، لیکن شیخ زید روڈ پر ایک غیرملکی خاتون نے محض ایک گھنٹے کے دوران اتنی بار قانون توڑا کہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیوں کی ریکارڈنگ کرنے والا ریڈار بھی گھبراگیا۔ خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق خاتون کی عمر 40 سال سے زائد بتائی گئی ہے اور جب ٹریفک ریڈار نے انہیں بار بار قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پکڑا تووہ پورش کین نامی مہنگی گاڑی چلارہی تھیں۔ دبئی پولیس کے ڈیپارٹمنٹ آف ٹریفک کے ڈائریکٹر جنرل کرنل سیف المزروعی کا کہنا تھا کہ کسی خاتون کی جانب سے مختصر وقت کے دوران اتنے بڑے پیمانے پر ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کا یہ پہلا واقعہ ہے۔ جب رات کے تین بجے خاتون کو پکڑا گیا تو پتہ چلا کہ وہ 220 سے 240 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گاڑی چلا رہی تھی۔ جب اس سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس کا کہنا تھا کہ وہ ذہنی دباﺅ کی شکار تھی اور راشد ہسپتال جارہی تھی۔واضح رہے کہ دبئی میں 120 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتا رسے تجاوز کرنے پر 1000 درہم جرمانہ کیا جاتا ہے۔ ٹریفک پولیس حکام کا کہنا ہے کہ خاتون نے ذہنی مسائل کا بہانہ بنا کر جرمانہ معاف کروانے کے لئے بارہا رابطہ کیا ہے لیکن اس کے موقف کو بے بنیاد قرار دے کر رد کردیا گیا ہے۔ پولیس حکام کا مزید کہنا تھا کہ جب یہ خاتون تقریباً 250کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گاڑی دوڑارہی تھی تو خوش قسمتی سے شیخ زید روڈ تقریباً خالی تھی، ورنہ کوئی خوفناک حادثہ بھی رونما ہوسکتا تھا۔