بھارت پاکستان میں دہشتگردی کررہا ،ہمارے حکمران دوستی نبھارہے ہیں،لفظی جنگ لڑنے سے کچھ نہیں ہوگا:طاہر القادری

لاہور (ڈیلی خبر) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری نے کہا ہے کہ بھارت پاکستان میں دہشتگردی کر رہا ہے اور ہمارے حکمران اس سے دوستی نبھانے میں لگے ہوئے ہیں۔دہشتگردی کیخلا فلفظی جنگ لڑنے سے کچھ نہیں ہوگا۔دنیا نیوز کے پروگرام”ٹونائٹ ود معید پیرزادہ“میں طاہر القادری کا گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ قوم کو اصل دہشتگردوں سے متعلق کیوں نہیں بتایا جاتا ؟ایجنسیوں کی اصل معلومات حکومت کے علاوہ کسی کے پاس نہیں ہے ،ایجنسیاں حکومت کو دہشتگردانہ کارروائیوں سے متعلق تما م تر معلومات فراہم کرتی ہیں اوران کے پاس بھارت کیخلاف تمام تر شواہد موجود ہیں لیکن یہ پھر بھی ان کیخلاف آواز نہیں اٹھاتے جس کی وجہ یہ ہے کہ شرفا نے جو اقتدار حاصل کیا ہے اس کے پیچھے اصل مدد بھارت نے کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ بھارت کیخلاف آواز اٹھاتے ہوئے ان یاری آڑے آجاتی ہے جو انہیں ایسا کر نے سے روکتی ہے لیکن ایسی کونسی یاری ہے جوملک سے بھی زیادہ عزیز ہے؟ ۔بھارت میں جب بھی کوئی کارروائی ہوتی ہے تو براہ راست پاکستان پر الزام تراشی کرتاہے لیکن جب ہمارے ملک میں کوئی واقعہ رونما ہوجائے توہماری ایجنسیاں اس کیخلاف آواز اٹھاتی ہیں لیکن حکومت کی جانب سے پڑوسی ملک کے حوالے سے متعلق کوئی بیان نہیں آتا۔ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ بھارت دہشتگردی کے تمام واقعات میں ملوث ہے تو اسے عالمی برادری میں ننگا کیا جانا چاہیے اور انہیں براہ راست ڈنڈا دے کر ان سے سفارتی ، تجارتی تعلقات سمیت تمام تر روابط منقطع کردینے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں جاری قتل وغارت گری کو ہمیں سنگین طریقے سے لینا چاہیے ،دہشتگردی کو سیاست بنا کر مت کھیلا جائے ان شدت پسند کارروائیوں میں ملو ث افراد کیخلاف موثر کارروائی ہونی چاہیے۔لیکن مجھے پتہ ہے شریف برادران کبھی بھی ایسا نہیں کرینگے کیونکہ وہ بھارت سے ڈرتے ہیں انہیں اس بات کا ڈر ہے کہ ہمارا کاروبار متاثر ہونے کیسا تھ ساتھ ہمارا اقتدار نہ ہم سے چھن جائے جبکہ پڑوسی ملک کے شہری پاکستان میں داخل ہوتے ہیں اور دہشتگردانہ کارروائیاں کرتے ہیں لیکن پھر بھی حکومت کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی.