ازدواجی فرائض کی ادائیگی اور کمرے میں بلب کی ساخت کے درمیان تعلق جدید تحقیق میں سامنے آگیا، سائنسدانوں نے ہر شادی شدہ شخص کو حیران پریشان کردیا

روم(مانیٹرنگ ڈیسک) سائنسدانوں نے ازدواجی فرائض کی ادائیگی اور کمرے کے بلب کی ساخت کے مابین ایسا تعلق بیان کردیا ہے کہ سن کر شادی شدہ افراد پریشان ہو جائیں گے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ’’اگر کمرے میں 40واٹ کا لائٹ بلب لگا ہو تو مرد کی جنسی قوت بہت بڑھ جاتی ہے۔‘‘ سائنسدانوں کے مطابق اس بلب کی روشنی درمیانی ہوتی ہے جو ایک طرف جنسی ہارمون ٹیسٹاسٹرون کی خاطر خواہ مقدار پیدا کرنے کے لیے کافی ہوتی ہے جبکہ دوسری طرف اتنی روشنی میں چھائیاں بھی نظرنہیں آتیں۔‘‘اٹلی کی یونیورسٹی آف سینا کے ماہرین کے مطابق ’’یہ 40واٹ کا پرانی طرز کا بلب بھی ہو سکتا ہے اور 9سے 13واٹ کا نیا انرجی سیور بلب بھی۔ مذکورہ دونوں اقسام کے بلب ازدواجی فرض کی ادائیگی کے لیے بہترین ہیں۔ ماہرین نے اپنی اس تحقیق میں 2ہزار شادی شدہ افراد پر مشتمل سروے کیا ہے جس میں بلب کی طاقت اور مباشرت کے متعلق ان سے سوالات کیے گئے۔ ان کی واضح اکثریت کا کہنا تھا کہ 40واٹ کے پرانی طرز کے بلب کی روشنی میں وہ ازدواجی فرائض بہترطریقے سے ادا کرتے ہیں۔