’جو نوجوان انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھتے ہیں وہ۔۔۔‘ ماہرین نے خطرے کی گھنٹی بجادی، ایسا نقصان بتادیا جو آپ نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا، جان کر انسان فوری توبہ کرلے

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) حالیہ عرصے میں کئی سروے رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ دنیا میں فحش فلمیں دیکھنے کا رجحان بہت زیادہ بڑھ چکا ہے۔ اس قبیح لت کے جہاں کئی اور نقصانات ہیں وہیں اب ماہرین نے ایک ایسے نقصان کا انکشاف کر دیا ہے کہ اس لت میں پڑے لوگ ہمیشہ کے لیے اس سے تائب ہو جائیں گے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ ”فحش فلمیں دیکھنے سے مردانہ قوت شدید متاثر ہوتی ہے اور فحش مواد دیکھنے والا ہر دس میں سے ایک نوجوان اس مرض کا شکار ہو چکا ہے۔ اس کے علاوہ یہ لت مردوں کو ازدواجی تعلق سے بے نیاز کر دیتی ہے اور بیوی میں ان کی دلچسپی باقی نہیں رہتی جس سے ان کی ازدواجی زندگی ختم ہونے کے امکانات بہت زیادہ بڑھ جاتے ہیں۔“
ماہرین کی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر اینڈریو کا کہنا تھا کہ ”اس وقت انٹرنیٹ پر فحش موادکی بھرمار کے باعث اس تک رسائی بہت آسان ہو گئی ہے جس کی وجہ سے نوجوانوں کے اس لت میں مبتلا ہونے کی شرح میں ہوشربا اضافہ ہو رہا ہے۔ جس کے نتیجے میں تیزی کے ساتھ وہ جنسی مسائل سے دوچار ہو رہے ہیں۔ اس تحقیق میں اس لت میں پڑے جتنے لڑکوں سے بھی میں ملا ہوں ان میں واضح اکثریت کی عمریں 13سے 25سال کے درمیان تھیں۔ اگر کوئی 5سال تک روزانہ 15 منٹ تک فحش فلمیں دیکھتا ہے اور اس دوران خودلذتی کے عمل سے گزرتا ہے تو پانچ سال بعد وہ بالکل بے حس ہو جائے گا اور شدید مسائل سے دوچار ہو کر وہ ازدواجی تعلق کے بہت حد تک قابل نہ رہے گا۔“