لمبے قد کے مَردوں کا کینسر کی اس قسم کا شکار ہونے کا امکان بے حد زیادہ ہوتا ہے کیونکہ۔۔۔ سائنسدانوں نے دراز قد افراد کو انتہائی پریشان کن خبر دے دی

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)پست قامت مرد عموماً دراز قامت مردوں کو حسرت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں کیونکہ دراز قد مردوں کے جاذب نظر ہونے کا عام معیار ہے لیکن اب سائنسدانوں نے دراز قامت مردوں کو ایسی بری خبر سنا دی ہے کہ جان کر وہ بھی پست قامت ہونے کی خواہش کرنے لگیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق آکسفورڈ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے اپنی نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ ”دراز قامت اور قدرے موٹاپے کے شکار مردوں کو مثانے کا کینسر لاحق ہونے کے امکانات دوسرے مردوں کی نسبت بہت زیادہ ہوتے ہیں۔“’8ممالک کے 1لاکھ 41ہزار مردوں پر کی گئی تحقیق کے نتائج میں بتایا گیا ہے کہ جن مردوں کے قد 6فٹ ہوں ان کو مثانے کا کینسر ہونے کا امکان 21فیصد ہوتا ہے اور اگر انہیں ادھیڑ عمری میں پہنچ کر کمرموٹاپا آ لے اور ان کی کمر میں4انچ کا اضافہ ہو جائے تو امکان میں 13فیصد کا مزید اضافہ ہو جاتا ہے۔اس کی وجہ یہ ہے کہ دراز قامت مردوں میں جنسی ہارمون ٹیسٹاسٹرون کی مقدار زیادہ پیدا ہوتی ہے اور جو مرد موٹاپے کا شکار ہوں ان میں یہ مقدار مزید بڑھ جاتی ہے۔تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ ڈاکٹر ارورا پیریز کورنیگو کا کہنا تھا کہ ”ہماری تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ موٹاپے کے شکار دراز قامت افراد ایک تو مثانے کے کینسر کا زیادہ شکار ہوتے ہیں اور دوسرے ان کا کینسر شدید بھی بہت زیادہ ہوتا ہے جو بسااوقات قابل علاج نہیں ہوتا۔“واضح رہے کہ برطانیہ میں ہر سال 46ہزار مرد مثانے کے کینسر کا شکار ہوتے ہیں جن میں سے 11ہزار موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔