فوجی عدالتوں میں توسیع ، پیپلز پارٹی نےبڑا اقدام اٹھا لیا

اسلام آباد(ڈیلی خبر)فوجی عدالتوں میں توسیع کا معاملے پر مشاورت کے لیے پیپلزپارٹی نے 4 مارچ کو کل جماعتی کانفرنس بلا نے کا اعلان کر دیا ، پیپلز پارٹی نے پارلیمانی رہنماوں کو کانفرنس میں شرکت کی دعوت دینے کے لئے وفد تشکیل دے دیا ۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق پیپلز پارٹی نے فوجی عدالتوں کی توسیع سے متعلق آئینی ترمیم پر تمام جماعتوں کو اکھٹا کرنے کا فیصلہ کیا ہےاور اس سلسلہ میں 4 مارچ کو زرداری ہاوس اسلام آباد میں ’’ آل پارٹیز کانفرنس ‘‘ طلب کر لی ہے ۔قبل ازیں پارلیمنٹ میں سیاسی جماعتوں کے قائدین کئی اجلاسوں کے باوجود فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر متفق نہیں ہوسکے جس کے بعد معاملہ دوبارہ ذیلی قائمہ کمیٹی کے سپرد کیا گیا جو آج ایک مرتبہ پھر بے نتیجہ ختم ہو گیا ۔فوجی عدالتوں میں توسیع کے حوالے سے پارلیمانی رہنماؤں کا اجلاس اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کی سربراہی میں ہوا جس میں پیپلز پارٹی کی جانب سے نوید قمر نے شرکت کی تاہم سیاسی جماعتیں فوجی عدالتوں میں توسیع کے معاملے پر متفق نہ ہو سکیں۔ پیپلز پارٹی کے رہنما نوید قمر کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے ہمارے تحفظات دور کر دیئے تو ہم فوجی عدالتوں میں توسیع کے معاملے پر متفق ہو جائیں گے۔واضح رہے کہ 16 دسمبر 2014 کو پشاور کے آرمی پبلک اسکول میں ہونے والے دہشتگرد حملے کے بعد آئین میں ترمیم کرکے دو برس کے لیے فوجی عدالتیں قائم کی گئی تھیں۔ آئینی مدت مکمل ہونے کے بعد اب ان کی کوئی قانونی حیثیت نہیں رہی اور سیاسی جماعتیں بھی اس اہم معاملے پر اتفاق رائے پیدا نہیں کر سکیں ۔