پنجاب میں ڈرگ ایکٹ آئین پاکستان اور انسانی حقوق سے متصادم ,اجارہ داری کاخواب دیکھنے والے حکمران بوکھلاہٹ کا شکار ہیں:راجہ پرویز اشرف

گوجرخان (ڈیلی خبر)سابق وزیر اعظم اور پیپلز پارٹی کے رہنما راجہ پرو یز اشرف نے پنجاب حکومت کے ڈرگ ایکٹ کو انسانی حقوق اور آئین پاکستان سے متصادم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکمرانوں کو چاہیے تھا کہ کیمسٹس اور انکے زیر کفالت گھرانوں کے معاشی قتل کی اس ساز ش کا سبب بننے والوں کو نشان عبر ت بنا دیتے ، مگر غیر معیاری ادویات کی تیار ی و فروختگی کی شکایات پر قانون کو حرکت میں لانے کی بجائے ان اداروں اور اس کا روبار کو ہی ختم کر تے ہوئے اجارہ داری کاخواب دیکھنے والے حکمران بوکھلاہٹ کا شکار ہیں، اس حوالہ سے اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ اس معاملہ کو سوموار کے روز اسمبلی میں اٹھائیں گے۔کیمسٹس ایسوسی ایشن گوجرخان کی جانب سے اظہار یکجہتی و اظہار تشکر کے حوالے سے منعقدہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے راجہ پرو یز اشرف نے کہا کہ جعلسازی اور غیر معیاری اشیا ء کی تیاری و فروختگی کے مکروہ دھندے سے نمٹنے کیلئے قوانین موجود ہیں ، اس حوالہ سے قانون کو تحرک میں لانے کی بجائے حکمرانوں کا اسکی آڑ میں مناپلی کے نظام کے رواج کیلئے اُس کا روبار کو ہی بند کرادینے کیلئے لاٹھی اٹھالیناہر گز قرین انصاف نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ کسی ہوٹل پر غیر معیاری کھانے کی فروختگی پرتما م ہوٹلزیا ناقص سریا تیا ر کیئے جانے پر تمام کارخانے بند کر دینا ہر گز دانشمندانہ قدم نہیں ہے ۔