کشمیری نوجوان کی جگہ ارون دھتی رائے ۔۔۔ پاریش راول نے طوفان کھڑاکردیا

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کی حکمراں جماعت بی جے پی کے رہنما اور اداکار پریش راول نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں آرمی جیپ پر پتھر پھینکنے والوں کو باندھنے کے بجائے اروندھتی رائے کو باندھنا چاہیے۔برطانوی میڈیا کے مطابق بی جے پی کے رہنما اور اداکار پریش راول نے مقبوضہ کشمیر میںفوجی جیپ سے کشمیری نوجوان کو باندھ کر گھمانے کے معاملے کو آگے بڑھاتے ہوئے ایک ٹویٹ کیا ہے۔پریش راول نے لکھا کہ آرمی جیپ پر پتھر پھیکنے والوں کو باندھنے کے بجائے اروندھتی رائے کو باندھنا چاہیے۔روندھتی رائے مصنفہ اور سماجی کارکن ہیں، جو اکثر کشمیریوں کے حق میں بولتیں نظر آتی ہیں۔کچھ میڈیا رپورٹس کے مطابق حال ہی میں اروندھتی رائے نے کہا تھا کہ بھارت کشمیر میں اگر سات سے 70 لاکھ فوجی بھی تعینات کر دے، تب بھی کشمیر میں اپنا ہدف نہیں پا سکتا۔اس ٹویٹ پر پریش راول کو سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، اگرچہ اس معاملے میں پریش راول جیسی سوچ رکھنے والے کچھ لوگ اسے پسند بھی ہیں۔صحافی پرینکا بورپجاری نے لکھا کہ فلموں میں اپنے کردار میں اپنی جان پھونکنے کے فن کی میں قائل ہوں۔ لیکن آپ کے پرتشدد الفاظ سے میں حیران ہوں۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ اس ٹویٹ سے تشدد بھڑکانے پر آپ کو جیل ہو سکتی ہے۔سنیل گوسوامی اس کا جواب دیتے ہوئے لکھتے ہیں کہ ساگریا گھوش کھلے عام فساد بھڑکانے کی کوشش کرتی ہیں، وہ آپ کو سب کے لیے ٹھیک ہے؟اتنا ہی نہیں، کچھ لوگوں نے تو دوسرے معروف صحافیوں کو بھی نشانہ بنایا۔اشونی شرما نے قابل اعتراض تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ سر، اگر آرمی ساگریا گھوش، برکھا دت اور رعنا ایوب کو باندھے تو اس جیپ پر میں پتھر پھینکوں گا۔ٹوئٹر پر خود کو وی ایچ پی کا کارکن کہلوانے والے ابھیشیک مشرا لکھتے ہیں کہ باندھنے کے لیے بہت سے لوگ ہیں۔ اروندھتی ان میں سے ایک ہیں۔ فہرست طویل ہے ایسے لوگوں کی۔ریئل بائیٹس نامی ٹوئٹر اکانٹ والے ایک شخص نے طنزا کیا کہ یہی ہوتا ہے، جب ایک مسخرا وزیر بن جاتا ہے۔