فلم کو ڈرامے سے دور رکھے بغیر انڈسٹری بہتر نہیں ہو سکتی، زارا شیخ

لاہور:(ڈیلی خبر) اداکارہ وماڈل زارا شیخ نے کہا ہے کہ فلم کوڈرامے سے دورنہیں رکھا جائے گا اورٹرینڈ نوجوانوں کو کام کے مواقع نہیں دیے جائیں گے، تب تک فلم انڈسٹری میں بہتری ممکن نہیں۔زارا شیخ نے ’’ایکسپریس‘‘سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ 70ء اور80ء کی دہائی میں پاکستانی ڈرامے نے ملک ہی نہیں بلکہ ہمارے ہمسایہ ملک بھارت کی فلم نگری کے مہان فنکاروں کوبھی اپنا گرویدہ بنا رکھا تھا۔ ڈرامے کی کہانیاں، ڈائیلاگ،

فنکاروںکی اداکاری اورڈائریکٹرسمیت تکنیک کاروں کے باکمال فن کوجس طرح سے بھارتی فلم انڈسٹری والوں نے سراہا اوراپنایا ہے اگرکوئی پاکستان میں بھی اپنے اُن بے مثال فنکاروں اورتکنیک کاروں سے سیکھتا یا ان کے فن کو نئی نسل تک منتقل کرنے کے لیے اکیڈمیاں قائم کرتا توشاید آج ہم ماضی کے بجائے موجودہ دورمیںبننے والے ڈراموں کا تذکرہ کرتے۔ اسی طرح پاکستانی فلم کا ماضی بھی بے حد شاندارتھا اوراب مستقبل بھی شانداردکھائی دے رہا ہے۔اداکارہ نے کہا کہ اگرہم بھارتی فلم نگری کی بات کریں تووہ پاکستانی ڈرامے سے اس قدرمتاثر تھی کہ آج بھی بھارت کی ’’پونا اکیڈمی آف ایکٹنگ‘‘ سمیت ممبئی، کولکتہ، دہلی اور دیگر مقامات پرقائم ایکٹنگ اسکولوں میں پاکستانی ڈرامہ دکھا کراداکاری سکھائی جاتی ہے۔