چیف جسٹس اور وزیراعظم کی ملاقات ،میں ایک سال سے جو بات کررہا تھا بالاخر وہ ہی ہوا، سابق وزیرداخلہ چوہدری نثار نے بڑا دعویٰ کردیا

اسلام آباد( ڈیلی خبر )سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ چیف جسٹس اور وزیراعظم کی ملاقات سے ابہام دور نہیں ہوئے بلکہ ان میں اضافہ ہوا ہے،ملاقات کا مقصد اگر اداروں میں نرمی پیدا کرنا تھا تو میں ایک سال سے یہی بات کررہا ہوں، اگر یہ راستہ اختیار کرلیا جاتا تو اس ملاقات کی ضرروت ہی نہ پڑتی۔نجی ٹی وی کے مطابق چوہدری نثار نے کہا کہ حکومت اور سپریم کورٹ کو شکوک شبہات دور کرنے کے لیے مل کر قدم اٹھانا چاہیے ۔چوہدری نثار نے وزیراعظم کے دورہ امریکہ کو تنقید کا نشانہ بناتےہوئے کہا کہ وزیراعظم کی امریکی نائب صدر سے ملاقات کا مقصد منفی امریکی بیانیے کی تشہیر ہے۔مجھے وزیراعظم اور امریکی نائب صدر کی ملاقات کا مقصد سمجھ نہیں آیا۔ ہمیں امریکی حکام کو یہ موقع نہیں دینا چاہیے کہ وہ ہماری قیادت کو لیکچر دیں، یکطرفہ مسلط کردہ امریکی بیانیہ کی حوصلہ شکنی ہونی چاہیے۔