منتخب حکومت کا تختہ الٹنے اور عوام پر گولیاں چلانے والوں کو بھاری قیمت چکانا ہوگی، ترک صدر

انقرہ (ویب ڈیسک)ترکی کے صدر طیب اردوان نے کہا ہے کہ پولیس،جمہوریت پسندفوج اورعوام نے نکل کربغاوت ناکام بنادی، ملک اور جمہوریت کے خلاف سازش کی گئی تھی۔کہیں نہیں جارہا، عوام کے درمیان موجود رہوں گا۔پہلے بھی عوام کی خدمت کی،اب بھی عوام کی خدمت جاری رکھیں گے۔ استنبول میں خطاب کرتے ہوئے ترک صدر نے کہا کہ صورتحال پرقابوپالیاگیا ہے،باغیوں نے مختلف علاقوں میں طیاروں سیب مباری کی، یہ طیارے ملک کی حفاظت کے لیے تھے،عوام کیخلاف استعمال کرنے کے لیے نہیں تھے۔ ترک صدر نے کہا کہ عوام کی خدمت کاموقع ملاہے اوراس سے بھرپورفائدہ اٹھائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ملک اور جمہوریت کے خلاف سازش کی گئی تاہم آج کا ترکی پہلے سے مختلف ہے۔ملکی یکجہتی اوراتحادکیخلاف بغاوت کی کوشش ناکام بنادی گئی ہے۔ بغاوت کے خلاف لاکھوں افراد سڑکوں پر جمع ہیں۔ طیب اردوان نے کہا کہ بغاوت کرنے والوں کا تعلق خواہ کسی ادارے سے ہو انہیں مناسب جواب دیا جائے گا۔باغیوں کو بھاری قیمت ادا کرنا ہوگی۔انہوں نے کہا کہ کچھ فوجی پنسلوینیاسے احکامات لے رہے ہیں جو گولن کا گھر ہے۔ فوجیوں کی گرفتاری جاری ہے جو بڑے افسروں تک جائے گی۔ ترک صدر نے کہا کہ کچھ لوگ ملک کو ترقی کرتا دیکھنا نہیں چاہتے، پولیس، جمہوریت پسند فوج اور عوام نے مل کر اس سازش کو ناکام بنادیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ترک فوج کو باغیوں سے پاک کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ قبل ازیں ترک صدر طیب ایردوان کی استنبول ایئرپورٹ آمد پر عوام کی بڑی تعداد نے ان کا پرجوش استقبال کیا۔